سعودی علماء نے کشمیر کے معاملے پر اہم اعلان کر دیا

سعودی شُوریٰ کونسل کے چیئرمین نے کہا کہ شوریٰ کُونسل اور سعودی عرب اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں، کشمیر پر بین الاقوامی کانفرنس کے انعقاد کی حمایت کا بھی اعلان کیا ہے
ریاض سعودی عرب پاکستان کا دیرینہ دوست ہے اور ہر مشکل وقت میں اس کے شانہ بشانہ کھڑا ہوتا ہے۔ اس وقت کشمیر کا مسئلہ بھی دُنیا بھر میں خصوصی توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے۔ ایسے وقت میں ایک بار پھر سعودی بھائیوں کی جانب سے کشمیر پر پاکستانی موقف کا اعادہ کرتے ہوئے اسے درست قرار دیا ہے ۔سعودی عرب کے دورے پر آئے پاکستانی پارلیمان کے نمائندہ وفد سے ملاقات کے دوران سعودی شُوریٰ کونسل کے چیئرمین عبداللہ محمد ابراہیم آل الشیخ نے کشمیر پر بین الاقوامی کانفرنس کے انعقاد کی حمایت کر دی ہے۔
عبداللہ آل الشیخ نے پاکستانی پارلیمانی وفد کے قائد اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے ملاقات میں کہا کہ وہ 2020ء کے اوائل میں اسلام آباد میں کشمیر پر مجوزہ بین الاقوامی پارلیمانی کانفرنس کے انعقاد کی حمایت کرتے ہیں۔

عبداللہ آل الشیخ کا کہنا تھا کہ سعودی عرب اور شوریٰ کونسل اپنے کشمیری بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور بھارتی فورسز کے مقبوضہ کشمیر میں جاری ظلم و بربریت کا خاتمہ چاہتے ہیں اور کشمیری عوام کو آئینی حقوق دلوانے کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔
انھوں نے دونوں برادر اسلامی ممالک کے مابین پہلے سے موجود دوطرفہ تعلقات پر اطمینان کا اظہار کیا۔ انھوں نے اس بات سے اتفاق کیا کہ او آئی سی بین الاقوامی وعدوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے بھارت پر دباوٴ ڈالنے میں اہم کردار ادا کر سکتی ہے۔اسپیکر اسد قیصر نے اپنے سعودی ہم منصب ڈاکٹر عبداللہ بن محمد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خطے میں امن کے قیام کے لیے مسئلہ کشمیر کا پرامن حل ناگزیر ہے۔
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کے ظلم و ستم عروج پر ہیں اور کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت کے فیصلوں سے ہندوستان میں اقلیتوں کو خطرہ لاحق ہے۔ملاقات میں حکومت اور اپوزیشن سے تعلق رکھنے والے ارکان قومی اسمبلی بھی موجود تھے۔

Saudi clerics make important announcement on Kashmir issue Saudi Shura Council Chairman said that Shura Council and Saudi Arabia stand with their Kashmiri brothers, also announced support for holding international conference on Kashmir Riyadh is a long-time friend of Saudi Arabia and stands side by side in every difficult time. At that time, the Kashmir issue is also the center of special attention all over the world. Saudi Arabia has once again reaffirmed its position on Kashmir by Saudi brothers. Abdullah Mohammed Ibrahim Al-Shaykh, Chairman of the Council of the Saudi Council during a meeting with a delegation of Pakistani parliamentarians visiting Saudi Arabia. Has supported holding an international conference on Kashmir.  Abdullah Al-Shaykh met with Speaker National Assembly Asad Qaiser, the speaker of the Pakistani parliamentary delegation, and said he supports the holding of the proposed international parliamentary conference on Kashmir in Islamabad in early 2020. Abdullah Al-Shaykh said that Saudi Arabia and the Shura Council stand side by side with their Kashmiri brothers and seek to end the atrocities committed by Indian forces in occupied Kashmir and fully support the Kashmiris in giving constitutional rights to the people. He expressed satisfaction over the bilateral relations that exist between the two brotherly Islamic countries. He agreed that according to international commitments, the OIC could play an important role in pressuring India to resolve the Kashmir issue. Speaker Asad Qaiser spoke to his Saudi counterpart Dr Abdullah bin Mohammed. He said that a peaceful solution to Kashmir is essential to establishing peace in the region.
The brutality of Indian forces in occupied Kashmir is on the rise and serious human rights abuses are taking place in Kashmir. He said that the decisions made by the Indian government are a threat to the minorities in India. The members of the government and the opposition members were also present in the meeting.

اپنا تبصرہ بھیجیں