مقبوضہ کشمیر پر او آئی سی کا اجلاس اسلام آباد میں کرانے کا فیصلہ

اسلام آباد (این این آئی) او آئی سی آئندہ برس اسلامی سربراہی کانفرنس کشمیر پر خصوصی اجلاس بلائے گی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس اسلامی سربراہی کانفرنس کے وزرائے خارجہ کی سطح کا ہو گا،اجلاس سعودی عرب کی جانب سے طلب کیا جائیگا۔ ذرائع نے بتایاکہ اجلاس کا انعقاد اسلام آباد میں کیا جائے گا،اجلاس کاانعقاد اپریل کے مہینہ میں متوقع ہے۔ ذرائع کے مطابق جلاس کے اعلامیہ میں خصوصی طور پر مقبوضہ کشمیر اور بھارت میں شہریت ترمیمی بل 2019 کے بعد مسلمانوں کے حقوق کے تحفظ کی بات کی جائیگی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس کے اعلامیہ میں بھارت پر مقبوضہ کشمیر میں لاک ڈاون کے خاتمہ اور شہریت بل کی آڑ میں مسلم اقلیت کو نشانہ بنانے سے روکنے کیلئے دباؤ ڈالا جائیگا۔ ذرائع نے بتایاکہ پاکستان کے کوالا لمپور سمٹ میں شرکت نہ کرنے کے فیصلہ کے بعد سعودی ولی عہد نے وزیر اعظم کو کشمیر پر او آئی سی کا اجلاس بلانے کی یقین دہانی بھی کرائی تھی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں سعودی عرب, متحدہ عرب امارات, بحرین, ترکی, انڈونیشیا سمیت دیگر ممالک کی شرکت متوقع ہے،اجلاس کے ایجنڈا میں سر فہرست مقبوضہ کشمیر کی صورتحال،بھارت میں شہریت کے. متنازع بل کے بعد کی صورتحال ہو گی۔ ذرائع کے مطابق اسلامی سربراہی کانفرنس کا وزراے خارجہ اجلاس کولالمپور سمٹ کے بعد خصوصی حیثیت اختیار کر گیا،سعودی عرب نے حالیہ کامیاب کولالمپور سمٹ کے بعد او آئی ای کو متحرک کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع نے بتایاکہ سعودی وزیر خارجہ نے حالیہ دورے میں وزیراعظم کو اس حوالے سے اعتماد میں لیا، ذرائع کے مطابق او آئی سی کے کم فعال کردار پر ملائشیاء، ترکی، انڈونیشیا،قطر، ایران، شام، یمن اور لبنان سمیت متعدد مسلم ممالک کو تحفظات ہیں۔ ذرائع کے مطابق انہی تحفظات کے باعث کولالمپور سمٹ کو متبادل پلیٹ فارم کے طور پر دیکھا جا رہا تھا۔اب سعودی عرب،بحرین اور متحدہ عرب امارات نے کولالمپور سمٹ کے مقابلے کے لیے او آئی سی کی اہمیت کی بحالی کا فیصلہ کیا ہے۔

Islamabad (NNI) and IIC will convene a special meeting on Islamic Summit Kashmir next year. According to sources, the meeting will be at the level of the Foreign Ministers of the Islamic Summit, the meeting will be summoned by Saudi Arabia. Sources said that the meeting will be held in Islamabad, the meeting is expected in the month of April. According to sources, the announcement of the meeting will talk about the protection of the rights of Muslims after the specially-occupied Kashmir and India’s Citizenship Amendment Bill 2019. According to sources, India occupied the meeting statement Pressure will be put in place to end the lockdown in Kashmir and prevent the Muslim minority from hitting the citizenship bill. The source said that after Pakistan’s decision not to attend the Kuala Lumpur Summit, Saudi Arabia had also assured the Prime Minister to convene an OIC meeting on Kashmir. According to sources, other countries including Saudi Arabia, United Arab Emirates, Bahrain, Turkey, Indonesia are expected to attend the meeting, the status of occupied Kashmir in the agenda of the meeting, of citizenship in India. There will be a situation after the controversial bill. According to sources, the Foreign Ministerial meeting of the Islamic Summit took place after the Kuala Lumpur Summit, Saudi Arabia has decided to mobilize the OIE after the recent successful Kuala Lumpur Summit. According to sources, the Saudi Foreign Minister took the Prime Minister in this regard during a recent visit, according to sources, to the Muslim countries including Malaysia, Turkey, Indonesia, Qatar, Iran, Syria, Yemen and Lebanon on the less active role of the OIC. There are reservations. According to sources, the Kollampur Summit was seen as an alternative platform due to these concerns. Now Saudi Arabia, Bahrain and the United Arab Emirates have decided to restore the importance of the OIC to the Kollampur Summit….