عوام کو شدید سردی میں مشکلات کا سامنا

آفت زدہ علاقہ قرار دینے کے باوجود عوام سے یوٹیلٹی بلز کی وصولی جاری ہے ، آزادکشمیر کی حکومت نے بھی آنکھیں بند کر لی ہیں
ابتدائی طور پر 3 ارب روپے کے فنڈز متاثرین کی آبادکاری اور بحالی کیلئے وفاق سے لینے کیلئے اپیل کی گئی تھی،عوامی حلقے
میرپور(ارشد محمود بٹ) میرپور متاثرین زلزلہ کی امداد کیلئے تین ارب کی فراہمی کیلئے وفاق نے انکار کر دیا، تین ماہ سے زائد عرصہ گزر گیا شدید سردی میں متاثرین کو مشکلات کا سامنا، آزادکشمیر کی حکومت نے بھی آنکھیں بند کر لیں۔ 24 ستمبر کے تباہ کن زلزلے کے نتیجے میں ہونیوالے نقصانات کا جائزہ لینے اور سروے کرنے کے بعد ابتدائی طور پر 3 ارب روپے کے فنڈز متاثرین کی آبادکاری اور بحالی کیلئے وفاق سے لینے کیلئے اپیل کی گئی تھی ،اوصاف زرائع کے مطابق وفاق نے فی الحال تین روپے کی ادائیگی سے انکار کر دیا ہے جس سے متاثرین زلزلہ شدید مایوسی کا شکار ہیں وفاق کی طرف سے اس بے رخی کیساتھ ساتھ آزاد حکومت نے بھی متاثرین سے سوتیلی ماں کا سلوک جاری رکھا ہے آفت زدہ علاقہ قرار دینے کے باوجود عوام سے یوٹیلٹی بلز کی وصولی جاری ہے آج میرپور اور کھڑی کے عوام وفاقی حکومت اور آزادکشمیر کی حکومت کے رویہ سے بددل ہوگئے ہیں۔