پولیس کیخلاف “شکایت” شہری کو بھاری پڑھ گی

پولیس کیخلاف “شکایت” شہری کو بھاری پڑھ گی

ہیٹاں بالا (بیوو رپورٹ)پولیس کے خالاف شکایت شہری کو بھاری پڑھ گی پولیس اہکار محمد شکور مغل نے اپنے پاس سے شراب اور چرس ڈال کر شہری کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ پریس کلب ہیٹاں بالا کی ایک تقریب میں صحافیوں کی موجودگی میں اور عوام کی موجودگی میں ظفرراجپوت نامی ایک شخص نے وزیر حکومت آزادکشمیر ڈاکٹر مصطفی بشیر عباسی سے شکایت کی کہ میرے ایک عزیز سے تھانہ پولیس چناری کے ایک اہکار شکور احمد نے دھمکی دیکر 20000 وصول کرلیے اور کہا کہ اگر تم نے پیسے نہ دیے تو میں تمارے خلاف چرس کا مقدمہ بناد دو گا اور یہ سارا واقع عابد نامی شخص کے سامنے ہواہے جس پروزیر حکومت ڈاکٹر مصطفی نے ظفر راجپوت کو یقین دلا کے پولیس اہکار شکور کے خلاف کاروائی ہوگی جب اس شکایت کاپتہ شکور احمد کو چلا تو اس نے محمد عابد سے رابط کیا اور کیا کہ اگر تمیں میرے خلاف گوائی دینی پڑھی تو تم انکار کر دینا لیکن محمد عابد نے انکار کردیا جس پر شکور احمد نے دھمکی دی کے تمیں اس کا میں آج ہی صلہ دوں گا شکور احمد نے از خود اپنے پاس سے محمد عابد کی غیر موجود میں اس کی رہاش کے قریب ایک جگہ شراب اور چرس رکھ دی اور شام ۵ بجے کے قریب پویس کی نفری کے ساتھہ محمد عابد کی غیر موجوگی میں چھاپہ مار کر پہلے سے رکھی ہوئی شراب اور چرس برآمد کرنے کا دعوا کیا اور عابد مغل کے خلاف مقدمہ درج کروا کر اس کو فرار قرار دے دیا عوامی حلقوں کی طرف سے ڈاکٹر مصطفی بشیر آئی جی آزاد کشمیر اور سے مطالبہ کیا ہے کہ کیا اگر کوئی شہری کسی پولیس اہکار کے خلاف آواز بلند کرے تو اس کے خلاف ایسا ہی ہوگا چونکہ شکور احمد کے خلاف پہلے بھی شراب کا مقدمہ درج ہوا اور اسی پویس ہلکار کی وجہ سے ہیٹاں بالا میں شراب اور چرس بکتی ہے اور یہ خود لوگوں کو بلیک میل کر کے لوگوں سے یہ کام کروتا ہے اگر مقامی انتظامیہ نے اسے لوگوں کے خلاف کاروائی نہ کی جو پویس کے روپ میں ہوکر خود غیر قانونی کام کرتے ہیں اور اس کا شکار شریف لوگوں کو بناتے ہیں تم ہم بھر پور احتجاج کریں گے راجہ ظفرراجپوت نے کیا کہ اگر فوری طور پر من گھڑت آیف آئی آر کا سلسلہ بند کر کے لوٹے گے 20000 روپے واپس نہ کیے گے تو ہم احتجاجی طور پت سڑکوں پر نکلیں گے