پاکستانی ڈرائیور نے کفیل کی بیٹی کو زیادتی میں ناکامی پر زخمی کر دیا

پاکستانی ڈرائیور نے کفیل کی بیٹی کو زیادتی میں ناکامی پر زخمی کر دیا

ملزم کفیل کی بیٹی کو چھُری کے وار سے لہولہان کر نے کے بعد سڑک پر پھینک کر فرار ہو گیا

 سعودی عرب میں روزگار کی غرض سے سینکڑوں پاکستانی مقیم ہیں جو باعزت طریقے سے روزگار کما کر مُلک کی شان بھی بڑھا رہے ہیں۔ مملکت میں مقیم پاکستانی ڈرائیورز کی گنتی لاکھوں میں ہے۔ تاہم چند ایک پاکستانی ڈرائیورز ایسے جرائم کرتے ہیں جن کے باعث پاکستان کی بھی رُسوائی ہوتی ہے اور وہاں پر مقیم لاکھوں پاکستانیوں کے سربھی شرم سے جھُک جاتے ہیں۔ ایسا ہی ایک شرمناک جُرم ایک پاکستانی نے کر ڈالا ہے جس نے اپنے کفیل کی بیٹی کو اپنی ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش کی ، مگر جب اپنی اس شیطانی کوشش میں کامیاب نہ ہو سکا تو اسے چھُری کے متعدد وار کر کے زخمی حالت میں سڑک پر پھینک کر فرار ہو گیا۔ اُردو نیوز کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ 35 سالہ پاکستانی ملزم ایک کفیل کے گھریلو ڈرائیور کے طور پر ملازمت کرتا تھا۔ آج صبح فجر کے وقت وہ کفیل کی 21 سالہ بیٹی کو گاڑی میں الشرائع کے علاقے میں واقع ایک گھر چھوڑنے جا رہا تھا۔ تاہم راستے میں اُس کی نیت خراب ہو گئی اور وہ گاڑی ایک ویران مقام پر لے گیا اور وہاں گاڑی روک دی ۔ جب لڑکی نے خطرے کو بھانپ کر اُس سے بحث تکرار کی مگر ہوس کے مارے ڈرائیور نے اچانک اُس پر جنسی حملہ کر دیا اور اُسے زیادتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی تاہم لڑکی کی جانب سے مزاحمت کیے جانے پر پاکستانی ڈرائیور مشتعل ہو گیا پہلے کفیل کی بیٹی کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں اورپھر اُسے اپنے پاس موجود چھُری کے کئی وار کر کے شدید زخمی کر ڈالا۔ اس کے بعد یہ بے رحم ڈرائیور اپنے کفیل کی بیٹی کو خون میں لت پت پولی کلینک کے سامنے پھینک کرسیدھا اپنے کفیل کے گھر گیا اور وہاں گاڑی کھڑی کر کے نامعلوم مقام پر فرار ہو گیا۔پولی کلینک کے باہر موجود راہگیروں نے زخمی لڑکی کی سنگین حالت کے پیش نظر اُسے ہسپتال منتقل کر دیا اور زخمی لڑکی کے گھر والوں کو بھی اطلاع کر دی گئی۔ زخمی لڑکی کو پولیس کو دیئے گئے بیان میں بتایا کہ اُن کے گھریلو ڈرائیور نے فجر کے وقت راستے کی سنسانی کا فائدہ اُٹھا کر اُ سے جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی مگر مزاحمت کیے جانے پر اپنی ہوس مٹانے میں کامیاب نہ ہو سکا تو اس کا بدلہ اُسے شدید زخمی کر کے لے لِیا۔ملزم نے 21 سالہ لڑکی کے سر اور گردن پر چھُری کے وار کیے۔اس شرمناک حرکت کے دوران ملزم نشے کی حالت میں تھا۔ پولیس کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ اس واقعے کے اطلاع ملنے کے بعد ہی مفرور پاکستانی ڈرائیورکی تلاش شروع کر دی گئی۔گاڑی میں زخمی لڑکی کے خون کے نشانات بھی پائے گئے ہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ پاکستانی ڈرائیور کو گرفتار کر لیاگیا ہے۔ ملزم کو تفتیش کی غرض سے سرکاری استغاثہ کے حوالے کر دیا جائے گا۔ اور پھر عدالت میں پیش کر کے اُس کے خلاف جنسی زیادتی، دھمکی اور اقدامِ قتل کے تحت مقدمہ چلایا جائے گا۔
[X]

اپنا تبصرہ بھیجیں