اٹلی میں قیامت خیز مناظر، کرونا وائرس سے ہزاروں جاں بحق

کرونا وائرس : اٹلی میں ہلاکتیں 7503 تک پہنچ گئیں

کرونا وائرس سے چین کے بعد سب سے متاثر ملک اٹلی میں بالآخر اموات میں کمی آنا شروع ہوئی ہے اس کے باوجود اٹلی میں اب تک وائرس سے ہونے والی اموات 7503 تک پہنچ چکی ہیں جبکہ 74 سے زائد افراد مریض ہیں۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق کرونا وائرس چین سے زیادہ اٹلی میں لوگوں کی اموات کا باعث جہاں 683 مزید ہلاکتوں کے بعد اب تک ساڑھے 7 ہزار سے زائد افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، اور گزشتہ کئی روز سے اٹلی میں لاک ڈاؤن ہے تاکہ کرونا وائرس کی وبا کو مزید پھیلنے سے روکا جاسکے۔اٹلی میں اموات کی شرح میں کمی تو واقع ہوئی ہے لیکن اب بھی وہاں نئے کیسز تیزی سے رپورٹ ہورہے ہیں جبکہ لوگوں کے زندگی کی بازی ہارنے کا سلسلہ بھی تاحال جاری ہے۔حوصلہ افزا بات یہ ہے کہ اٹلی کی ایک تھری ڈی پرنٹنگ کمپنی کے انجینئرز ’’ڈائیونگ ماسک‘‘ کی مدد سے خصوصی وینٹی لیٹرز تیار کر رہے ہیں جو مہلک کروناوائرس سے لڑنے کے لیے معاون ثابت ہوں گے۔خیال رہے اٹلی میں صورتحال چین سے زیادہ بدتر ہوگئی ہے، کرونا وائرس کے باعث لاشوں کے انبار لگ گئے جبکہ اسپتالوں میں بستر اور قبرستانوں میں دفنانے کیلئے جگہ نہ بچی، اطالوی نرسوں کا کہنا ہے تھک گئے ہیں، اب مزید لاشیں نہیں گن سکتے۔خیال رہے دنیا کے 198 ممالک میں کورونا وائرس سے ہلاک افراد کی تعداد 21 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے جبکہ چار لاکھ 71 ہزار سے زائد متاثر ہیں اور وائرس سے اب تک ایک لاکھ 14 ہزار 703 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں