ابوظہبی حکومت نے کورونا سے ڈرے سہمے افراد کو بڑا ریلیف دے دیا

ابوظہبی حکومت نے کورونا سے ڈرے سہمے افراد کو بڑا ریلیف دے دیا
سال 2020ء کے لیے مقامی اور تارکین وطن کے لیے تمام ٹول ٹیکسز ختم کر دیئے گئے

ابوظہبی( 16 مارچ 2020ء) متحدہ عرب امارات میں کورونا وائرس کے متاثرہ مریضوں کی گنتی 98 تک جا پہنچی ہے۔صرف ایک روز میں ہی مزید 17 افراد میں اس موذی مرض کی تشخیص ہوئی ہے۔تمام اماراتی ریاستوں میں میڈیکل ایمرجنسی نافذ کی جا چکی ہے جبکہ کئی اہم تفریحی مقامات بھی عارضی طور پر بند کر دیئے گئے ہیں۔ لوگوں میں شدید خوف و ہراس ہے ، اسی وجہ سے لوگ بڑی گنتی میں گھریلوضروریات کا سامان خرید کر ذخیرہ کر رہے ہیں تاکہ کسی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے میں مشکلات پیش نہ آئیں۔ ہر طرف بے یقینی کا عالم ہے۔ تمام سماجی و نجی تقریبات پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ ایسے وقت میں جب کہ ہر طرف پریشانی کا راج ہے، ابوظہبی کی حکومت نے مقامی اور تارکین کے لیے ایک ریلیف بھرا اعلان کر دیا ہے۔ ابو ظہبی کے ولی عہد اور اماراتی مسلح افواج کے سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید النہیان نے حکمنامہ جاری کیا ہے جس کے تحت ریاست کے تمام ٹول پلازوں کو ڈرائیورز سے ٹول ٹیکس لینے سے روک دیا گیا ہے۔ اس حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس کے سبب پیدا ہونے والے خصوصی حالات کے تحت ابوظہبی میں مقیم تمام افراد سے سال 2020ء کے دوران ٹول ٹیکس وصول نہیں کیا جائے گا۔ یہ حکم نامہ ایگزیکٹو کونسل کے آج صبح ہونے والے اجلاس کے بعد کیا گیا۔ اس اجلاس کے دوران تارکین و اماراتی افراد کے لیے کئی شعبوں میں ریلیف پیکیج کا بھی فیصلہ کیا گیا۔اس پیکیج کے تحت کئی عام افراد اور کاروباری حضرات دونوں کے لیے کئی سرکاری فیسوں میں کمی کر دی جائے گی یا ان کی وصولی بالکل نہیں ہو گی۔
اسی ریلیف پیکیج میں سے ایک ریلیف سال 2020کے اختتام تک ٹول ٹیکس فیسوں کی وصولی پر پابندی عائد کرنا ہے۔ابو ظہبی میڈیا آفس کی جانب سے عوام کوٹول ٹیکس کی معافی اور دیگر رعایتوں کا اعلان ٹویٹر اکاؤنٹ کے ذریعے کیا گیا۔ ٹول ٹیکس کی معافی کا اطلاق تمام چھوٹی بڑی گاڑیوں پر ہو گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں