سعودی عرب میں کرونا وائرس کے مریضوں کی گنتی میں بے حد اضافہ

سعودی عرب میں کرونا وائرس کے مریضوں کی گنتی 118 ہو گئی
سعودی وزارت صحت کے مطابق گزشتہ روز مزید 15افراد میں کرونا کی تشخیص ہو گئی ہے

ریاض( 16 مارچ 2020ء) سعودی عرب میں کورونا وائرس بہترین احتیاطی تدابیر اور موثر اقدامات کے باوجود قابو سے باہر ہو رہا ہے۔ سعودی وزارت صحت کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ گزشتہ روز اتوار کومزید 15 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہو گئی ہے جس کے بعد کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی گنتی 118 تک جا پہنچی ہے۔ مملکت میں کورونا وائرس کے سب سے زیادہ مریض قطیف کے صوبہ میں ہیں۔ سعودی حکام نے اس علاقے میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے باعث عارضی لاک ڈاؤن کر دیا ہے۔ ہر طرف لوگ ماسک پہنے گھوم رہے ہیں اور ان کی آنکھوں میں کورونا کا خوف ناچ رہا ہے۔ سعودی وزارت صحت کے مطابق کورونا وائرس کا تازہ ترین شکار بننے والوں میں دو افراد کا تعلق فلپائن اور انڈونیشیا سے ہے جو ریاض میں مقیم ہیں۔ یہ وہ لوگ ہیں جو کورونا وائرس کے مریضوں کے ساتھ رابطے میں ہونے کے باعث اس موذی مرض کا شکار ہوئے۔ دونوں تارکین کو قرنطینہ میں منتقل کر کے ان کا علاج کیا جا رہا ہے۔ جبکہ قطیف میں پانچ سعودی بھی کورونا وائرس کا تازہ ترین نشانہ بنے ہیں۔ یہ پانچوں افراد کورونا سے متاثرہ افراد سے ملنے کے باعث اس کا شکار ہوئے ہیں۔ قطیف میں مقیم دو سعودی ایسے ہیں جو بیرون ملک سفر کے دوران کورونا سے متاثر ہوئے، ان میں سے ایک ایران سے جبکہ دوسرا عراق سے آیا تھا۔
جبکہ دمام کا رہائشی ایک سعودی شہری مصر سے واپسی کے بعد اس مرض میں مبتلا پایا گیا۔ جدہ میں مقیم دو افراد میں بھی کورونا کی تشخیص ہوئی ہے، دونوں سعودی شہری ہیں۔ ان میں سے ایک مریض برطانیہ سے جبکہ دوسرا سوئٹزر لینڈ سے واپس آیا تھا۔ ان دونوں افراد کو جدہ کے مقامی ہسپتال میں علاج معالجے کی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔ وزارت صحت کے مطابق کورونا کے مزید تین مریض صحت یاب ہو کر گھر لوٹ چکے ہیں۔ جبکہ باقی افراد کا علاج جاری ہے۔ سعودی عرب میں کورونا کے پھیلاؤ کے باعث شاپنگ مالز بند کر دیئے گئے ہیں اور عوام کو زیادہ سے زیادہ وقت گھروں میں ہی گزارنے کی تلقین کی جا رہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں