آزادکشمیر میں گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران کرونا کے چار نئے مریض...

آزادکشمیر میں گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران کرونا کے چار نئے مریض سامنے آئے

آزادکشمیر میں گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران کرونا کے چار نئے مریض سامنے آئے

مظفرآباد ( پی آئی ڈی)16مئی2020آزادجموں وکشمیر کے وزیر آئی ٹی وحکومتی ترجمان ڈاکٹر مصطفی بشیر نے کہا ہے کہ آزادکشمیر میں گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران کرونا کے چار نئے مریض سامنے آئے ، جن میں سے تین کا تعلق مظفرآباد جبکہ ایک کا میرپور سے ہے اور ایک مریض صحت یا ب ہو گیاہے ۔ ایمز مظفرآباد میں کرونا کے دو مریضوں کی حالت تشویشناک ہے ۔ وزیر اعظم آزادکشمیر نے ماہ مقدس میں گراں فروشی کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن لینے کی ہدایت کی ہے ۔بھارت سیز فائر لائن پر آباد شہری آبادی کو نشانہ بنا کر مقبوضہ کشمیر کی سنگین صورتحال سے توجہ ہٹانا چاہتا ہے ۔ سیز فائر لائن پر آباد کشمیری بھارتی جارحیت سے ڈرنے والے نہیں وہ افواج پاکستان کے شانہ بشانہ دفاع وطن کےلئے برسرپیکارہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوںنے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ڈاکٹر مصطفی بشیر نے کہا کہ مظفرآباد میں جو تین نئے کرونا کے کیسز آئے ہیں ان میں گزشتہ دنوں مظفرآباد میں ولی پلازہ میں جس درزی میں کرونا کی تصدیق ہوئی تھی اس کے ساتھ اس شخص کی گارمنٹس کی دوکان والے کا ٹیسٹ Random Samplingکے دوران پازٹیو آیا ہے اس کا تعلق مظفرآباد کے نواحی علاقے شیرواں سے ہے جبکہ دوسرا شخص کرونا کے مریض کا Contactہے ۔مظفرآباد کی تیسری مریض خاتون ہیں جو کہ پنجاب سے ہو کر آئی ہیں اور سانس کی تکلیف کے باعث ایمز ہسپتال میں داخل کیا گیا تھا اور ڈاکٹروں نے اس میں کرونا کی موجودگی کا شبہ ظاہر کیا تھا ان کا ٹیسٹ پازٹیو آیا ہے ۔ میرپور میں سامنے آنا والا کروناکا نیامریض بھی پہلے سے موجود کرونا کے مریض کا کنٹکٹ ہے ۔ انہوں نے کہاکہ آج ایک اور مریض صحت یاب ہو گیا ہے جسے ڈسچارج کر دیا گیا ہے اس کا تعلق بھمبر کے علاقے برنالہ سے ہے ۔ ڈاکٹر مصطفی بشیر نے کہاکہ آزادکشمیر میں اب تک3758 افراد کے ٹیسٹ لیے گئے جن میں سے3696 کے رزلٹ آچکے ہیں اور112افراد میں کرونا وائرس کی موجودگی پائی گئی ہے جن میں سے77افراد صحت یاب ہو چکے ہیںاور انہیں ڈسچارج کر دیا گیا ہے جبکہ34مریض زیر علاج ہیں اور ایک مریض کی موت ہوئی ہے۔انہوں نے کہاکہ آئسولیشن ہسپتال مظفرآباد میں کرونا کے دو مریضوں کی حالت تشویشناک ہے ان میں نذیر احمد جو کہ پلیٹ کا رہائشی ہے جبکہ دوسرا آصف قریشی سے دو روز قبل ٹیسٹ آنے پر آئسولیٹ کیا گیا تھا۔ ڈاکٹر مصطفی بشیر نے کہاکہ وزیر اعظم آزادکشمیر نے گراں فروشی کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن لینے کی ہدایت کی ہے ۔ رمضان المبارک میں عوام کی مشکلات کو کم کرنے کےلئے لاک ڈاﺅن میں نرمی دی گئی ہے اگر عوام نے حکومتی احکامات کی پاسداری نہ کی تو لاک ڈاﺅن میں نرمی کا فیصلہ واپس بھی لے سکتے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت آزادکشمیر نے عید الفطر کے پیش نظر ملازمین کو قبل از وقت تنخواہیں دینے کا فیصلہ کیا ہے اس سلسلہ میں جملہ بینکوںکو ہدایت کی گئی ہے کہ ایس او پی پر سو فیصد عملدرآمد یقینی بنائیں ۔ انہوںنے کہاکہ بھارت کی جانب سے سیز فائر لائن پر آباد معصوم شہریوں کو نشانہ بنانا انتہائی بزدلانہ فعل ہے ۔ بھارتی فوج مقبوضہ میں نوجوانوں کے جذبے سے بوکھلا گئی ہے ۔