پاکستان میں ابھی کورونا کا عروج آیا ہی نہیں ، بقر عید کے بعد کیا ہونیوالا ہے ؟ کورونا کے خلاف جنگ میں پیش پیش مشہور پاکستانی ڈاکٹر نےوارننگ جاری کردی

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان میں کورونا وائرس سے ہونے والی اموات کے اعتبار سے سب سے متاثرہ صوبے پنجاب کے یومیہ اعداد و شمار کے مطابق، 24 جون کا دن صوبائی دارالحکومت لاہور کے لیے بہت کٹھن تھا۔ اُن 24 گھنٹوں میں کووڈ 19 کے مرض نے لاہور شہر میں 55 جانیں نگل لیں

نامور صحافی عابد حسین بی بی سی کے لیے اپنی ایک رپورٹ میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اپریل، مئی اور جون میں متعدد بار ایسا دیکھنے میں آیا کہ سرکاری ویب سائٹ کے مطابق دن میں کیے گئے کُل ٹیسٹ کی تعداد کا اگر صوبوں میں کیے گئے ٹیسٹس سے موازنہ کیا جائے تو اس میں فرق نظر آتا ہے۔حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی زیر نگرانی دوسری صوبائی حکومت خیبر پختون خوا کے بارے میں وبا کے آغاز کے بعد تین مہینے تک یہ تنقید ہوتی رہی کہ ملک میں سب سے زیادہ شرح اموات رکھنے اور بڑھتے ہوئے انفیکشن ریٹ کے باوجود صوبے میں ٹیسٹنگ میں اضافہ نہ کرنا درست صورتحال چھپانے کے مترداف ہے۔لیکن جون کے مہینے میں وہاں یومیہ ٹیسٹ کرنے کی صلاحیت اور ٹیسٹنگ کی تعداد، دونوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا اور مئی کے مہینے میں اوسط 1300 یومیہ ٹیسٹ سے یہ تعداد بڑھ کر جون میں تقریباً 2900 ٹیسٹس یومیہ تک پہنچ گئی۔صوبے میں جون کے اختتام تک فی دس لاکھ آبادی ٹیسٹ کرنے کی تعداد 4056 تھی جبکہ صرف جون کے مہینے میں ساڑھے 16 ہزار نئے متاثرین 18.98 فیصد کے انفیکشن ریٹ کی شرح سے سامنے آئے۔خیبر پختون خوا میں جون کے 30 دنوں میں 478 اموات ہوئیں جس کی شرح اموات 2.88 فیصد بنتی ہے اور وہ مئی کے مقابلے میں واضح طور پر کم ہوئی ہے۔جب بی بی سی نے خیبر پختون خوا کے میڈیا فوکل پرسن برائے کووڈ 19 زین رضا سے ٹیسٹنگ کی حکمت عملی پر بات کی تو انھوں نے بھی دیگر

صوبوں کے موقف کے تقویت دیتے ہوئے کہا کہ وفاقی پالیسی میں تبدیلی کے بعد بیرون ملک سے آنے والوں کی ٹیسٹنگ نہ کرنے سے تعداد پر کچھ اثر پڑا ہے۔’این سی او سی کی جانب سے بیرون ملک سے لوٹنے والوں کا ٹیسٹ نہ کرنے کے فیصلے پر اختلافات ہوئے تھے اور کہا گیا کہ یہ درست فیصلہ نہیں ہے لیکن وقت کے ساتھ ہم نے دیکھا کہ کیونکہ مقامی منتقلی تقریباً 98 فیصد ہے تو تمام مسافروں کا ٹیسٹ کرنا ضروری نہیں ہے۔’اس کے علاوہ زین رضا نے خیبر پختون خوا میں نافذ ہوئے سمارٹ لاک ڈاؤن کی اثرات پر بات کرتے ہوئے کہا کہ اس کی وجہ سے بھی ٹیسٹ کرنے میں کچھ کمی ہوئی ہے۔’لاک ڈاؤن کرنا ایک اچھی اور کارآمد حکمت عملی ہے تاہم اس کی وجہ سے جو دیگر اثرات ہوتے ہیں ان میں سے ایک یہ تھا کہ لوگوں کے پاس باہر نکلنے کے مواقع کم تھے کہ وہ اپنے آپ کو ٹیسٹ کرا سکیں اور یہ بھی ٹیسٹ کم ہونے کی وجہ بنی۔’پاکستان میں وبا کے پھیلاؤ کو دیکھیں تو اس بات میں قطعی شک نہیں ہے کہ کم ٹیسٹس ہونے کے باوجود جون کے آخری دس دن کے بعد سے یقینی طور پر وائرس کے پھیلاؤ میں کچھ کمی دیکھی گئی ہے۔اسلام آباد میں تو بالخصوص اپریل سے لے کر اب تک کے اعداد و شمار ظاہر کرتے ہیں کہ وہاں کی انتظامیہ نے بہت موثر طریقے سے وبا کا مقابلہ کیا اور زیادہ ٹیسٹنگ کے باوجود انفیکشن ریٹ کو نو فیصد تک

لے آئے۔لیکن ملک کے باقی حصوں کو دیکھتے ہوئے سوال پھر بھی یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا پاکستان کی سمارٹ لاک ڈاؤن کی حکمت عملی اور صرف علامات ظاہر کرنے والوں کا ٹیسٹ کرنے کا فیصلہ درست ہے؟اس حوالے سے جب بی بی سی نے کراچی کے آغا خان یونی ورسٹی میڈیکل کالج کے ڈین پروفیسر عادل حیدر سے بات کی تو انھوں نے کہا کہ ہمیں یہ سمجھنا ضروری ہوگی کہ عید الفطر کا موقع پاکستان میں ‘سپر سپریڈر’ کا باعث بنا تھا یعنی اس کی وجہ سے بڑی تعداد میں لوگوں کو انفیکشن ہوا۔’اب جو ہم نئے متاثرین کی تعداد میں کچھ کمی دیکھ رہے ہیں، پہلے تو ہمیں لازماً تفیصل سے یہ جانچنا ہوگا کہ تعداد میں یہ کمی مصدقہ ہے یا نہیں۔ اور اگر ہے بھی، چاہے وہ سمارٹ لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہو یا لوگوں میں آگاہی آنے، یا دونوں باتیں ساتھ ہونے سے، میں پھر بھی یہ یقین سے نہیں کہہ سکتا کہ ہم نے پاکستان میں وبا کا عروج دیکھ لیا ہے۔’پروفیسر عادل نے ایک بین الاقوامی تحقیق کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو اپنے حفاظتی اقدامات پر پوری طرح توجہ دینی ہوگی تاکہ بقر عید کے موقع پر دوبارہ سے وبا کا پھیلاؤ نہ ہو۔’ہم ابھی بھی مشکل سے باہر نہیں نکلے ہیں۔ ایک تحقیق کے مطابق اگر پاکستان میں موجودہ حفاظتی اقدامات کی موجودہ صورتحال برقرار رہتی ہے اور کوئی کمی بیشی نہیں ہوتی، تو نومبر تک ہمارے ملک میں 20 ہزار اموات ہونے کا خدشہ ہے لیکن اگر ہم نے ذرا سی بھی کوتاہی کی اور غفلت کا مظاہرہ کیا، تو معاملات کہیں زیادہ بگڑ سکتے ہیں۔’

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

izmir escort
php shell
sakarya escort adapazarı escort beylikdüzü escort esenyurt escort istanbul escort beylikdüzü escort istanbul escort avcılar escort beylikdüzü escort şişli escort
istanbul escort bayan bilgileri istanbul escort ilanlari istanbul escort profilleri hakkinda istanbul escort sitesi istanbul escort numaralari istanbul escort fotograflari istanbul escort bayanlarin iletisim numaralari istanbul escort aramalari yapilan site istanbul escort istanbul escort