عمران خان نے فیصلہ کر لیا ، عثمان بزدار کی چھٹی پکی ،

لاہور (ویب ڈیسک) سیاسی منڈیر پر بیٹھا کالا کوا خبردار کر رہا ہے کہ اگلے چھ ماہ کے گرد سرخ دائرہ لگا ہوا ہے۔ سیاست کو سرخ دائرے کے حصار سے نکلنے کے لئے عقابی برق رفتاری سے کام کرنا ہوگا۔ اب صرف ترجمان طوطوں سے کام نہیں چلے گا۔ حکومت کو ڈیلیوری دکھانا ہوگی،

گورننس کو نتائج دینا ہوں گے، معیشت میں بہتری لانا ہوگی۔نامور کالم نگار سہیل وڑائچ اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔کالے کوے کی کائیں کائیں کو غور سے سنا تو وہ کہہ رہا تھا یہ چھ مہینے آزمائش کے ہیں۔ جولائی تا دسمبر ویسے بھی خطرناک ہوتے ہیں۔ ماضی کی بیشتر حکومتیں اسی موسم میں رخصت ہوئیں۔ اس وقت اُمید کی کوئل کہیں دور گھنے جنگلوں میں جا بیٹھی ہے۔ بلبل کی خوش نوائی بھی کہیں سننے میں نہیں آ رہی، کوئوں اور چیلوں کی بہتات ہے، فاختائیں کہیں چھپی بیٹھی ہیں۔حبس کے اس موسم میں بارش برسنے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔ کہتے ہیں کہ سیاسی حبس اور گرمی کا توڑ اس دفعہ مرکز سے نہیں صوبوں سے شروع ہوگا۔ صوبہ پنجاب میں ہما عثمان بزدار کے سر پر ایسے ڈیرے جمائے بیٹھا تھا کہ کیا شکرے اور کیا فاختائیں سب ہما کو اپنی طرف متوجہ کرنے میں ناکام ہو چکے تھے مگر ایسا لگتا ہے کہ شاہین بالآخر ہما کو کسی اور سر پر بٹھانے کے لئے آمادہ ہو گیا ہے۔نیلی گردن اور سنہری پروں کا لباس پہنے مور، رنگ برنگے پروں والا ایرانی سیمرغ، گولڈن فیزنٹ یعنی مرغ سنہری اور سرخ آسٹریلوی طوطا سب جلد ہی لاہور کی طرف اُڑان بھرنے والے ہیں۔ ہر ایک پرندہ خوشنما وزارتِ اعلیٰ کے چار بڑے امیدواروں کے شانے پر جا کر بیٹھے گا تاکہ اُن کی مدد کر سکے۔ ان میں سے ہر ایک ہما کو لبھانے کی کوشش کرے گا دیکھتے ہیں کہ ان میں کون ہما کو اپنے امیدوار کے سر پر بٹھانے میں کامیاب ہو گا۔

نیلی گردن اور سبز سنہرے پروں والا مور عبدالعلیم خان کو پسند کر چکا ہے جبکہ ایرانی سیمرغ محسن لغاری کا گرویدہ ہے، مرغ سنہری ہاشم جواں بخت کی طرف کھنچا چلا جا رہا ہے جبکہ آسٹریلوی طوطا میاں اسلم اقبال سے متاثر ہے۔ چاروں مرغانِ خوش نما کے امیدواروں کے ساتھ ساتھ پنجاب اسمبلی کی سربراہی کرنے والے عقاب چوہدری کو غچہ دینا کافی مشکل ہوگا۔ عقاب کافی عرصے سے پنجاب کو چلانا چاہتا ہے۔اسے اس کام کا تجربہ بھی ہے مگر شاہین، عقاب چوہدری کو موقع نہیں دے گا اسی لئے توقع کی جا رہی ہے کہ درمیانی راستہ نکالا جائے گا اور تحریک انصاف کے اندر ہی سے بزدار کا متبادل لایا جائے گا۔ علیم خان آج کل آئے دن شاہین خان سے ملاقاتیں کرنے اسلام آباد جاتا ہے۔علیم خان کی خوبی کامیاب بزنس مین ہونا اور پی ٹی آئی کو آرگنائز کرنے میں اہم کردار ہونا ہے مگر منفی پوائنٹ نیب کا مقدمہ ہے، ٹاپ آف دی لسٹ پر مور کا پسندیدہ امیدوار علیم خان ہی ہے۔ علیم خان، بزدار سے بالکل مختلف ہے وہ شکرا ہے کچھ نہ کچھ کر کے دکھائے گا۔مرغ سنہری ہاشم جواں بخت کے شانے پر سوار ہے۔ ہاشم باہر کا پڑھا لکھا اور انٹلیکچوئیل باپ مخدوم رکن الدین کا بیٹا اور مخدوم خسرو بختیار کا چھوٹا بھائی ہے۔ شوگر اسکینڈل سامنے نہ آیا ہوتا تو مرغ سنہری لازماً ہما کو مخدوم ہاشم کے لئے آمادہ کر لیتا مگر اسکینڈل کے ماحول میں ہاشم کو زمام دے کر بہت سے سوالات کا سامنا کرنا پڑے گا۔ بہت سی صحافتی چڑیاں اور چڑے روز تنقیدی طور پر چہچہائیں گے۔ شاہین نہیں چاہے گا کہ پرندوں کے غول کے غول اس پر پل پڑیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

izmir escort
php shell
sakarya escort adapazarı escort beylikdüzü escort esenyurt escort istanbul escort beylikdüzü escort istanbul escort avcılar escort beylikdüzü escort şişli escort
istanbul escort bayan bilgileri istanbul escort ilanlari istanbul escort profilleri hakkinda istanbul escort sitesi istanbul escort numaralari istanbul escort fotograflari istanbul escort bayanlarin iletisim numaralari istanbul escort aramalari yapilan site istanbul escort istanbul escort