میگا منی لانڈرنگ کیس میں اہم پیشرفت۔!!! آصف زرداری اور فریال تالپور کیخلاف گھیرا مزید تنگ، نیب کارروائی نے جیالوں کے اوسان خطاکردیے

اسلام آباد (ویب ڈیسک) میگا منی لانڈرنگ کیس میں اہم پیشرفت ۔نیب نے میگا منی لانڈرنگ کیس میں سابق صدر آصف زرداری ، فریال تالپور اور دیگر کیخلاف شواہد کو حتمی شکل دے دی ، فرد جرم عائد ہونے کے بعد نیب دس ماہ کے دوران جعلی اکاؤنٹس کے ذریعے ساڑھے چار ارب روپے کی

ٹرانزیکشنز کا مکمل ریکارڈ عدالت میں پیش کریگا جبکہ طارق سلطان کا بیان ، ہینڈ رائٹنگ ماہر کی رپورٹ اور جعلی اکاؤنٹ کی بطور اصل اکاؤنٹ تصدیق کرنے والی وعدہ معاف گواہ کا بیان بھی اہم شواہد میں شامل ہے ۔ نائنٹی ٹو نیوز کو دستیاب دستاویز کے مطابق طارق سلطان کا شناختی کارڈ ہی مبینہ طور پر دھوکے سے اے ون انٹرنیشنل نامی اکاؤنٹ کھولنے کے لئے استعمال کیا گیا تھا۔اکاؤنٹ کے ذریعے دس ماہ میں منی لانڈرنگ کے ساڑھے چار ارب روپے رکھے اور آگے منتقل کئے گئے ۔ نیب نے ٹرانزیکشنز کا مکمل چارٹ بھی تیار کر لیا ہے ۔میگا منی لانڈرنگ کے لیے مارچ دوہزار 14 سے جنوری 2015 کے دس ماہ کے عرصے میں یہ سب ٹرانزیکشنز کی گئیں ۔لکی انٹرنیشنل، لوجسٹک ٹریڈنگ،اقبال میٹلز، رائل انٹرنیشنل اکاؤنٹ اور عمیر انٹریشنل نامی مشکوک اکاؤنٹس سے بھی اے ون انٹرنیشنل کے اکاؤنٹ میں اربوں روپے منتقل کیے گئے ۔ اے ون انٹرنیشنل کے اکاونٹ میں جمع رقم زرداری گروپ آف کمپنیز کے اکاؤنٹس سمیت تیرہ مختلف اکاؤنٹس میں منتقل کی گئی۔ اے ون انٹرنیشنل کے اکاونٹ سے زرداری گروپ، ناصر عبداللہ لوتھا، انصاری شوگر ملز، اومنی گروپ، چیمبر شوگر ملز، ایگروفارمز، پارتھینن کے اکاؤنٹس کے علاوہ سٹیٹ بنک کیجانب سے مشکوک قرار دیے گئے مختلف اکاونٹس میں رقم منتقل کی گئی۔جعلی اکاؤنٹس کیس میں نیب 28 مختلف مشکوک بنک اکاؤنٹس کی تفتیش کررہا ہے اور تفتیش کے بعد احتساب عدالت میں 10 ریفرنسز دائر کئے جاچکے ہیں جن میں میگا منی لانڈرنگ ، پارک لین ریفرنس اور ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں آصف زرداری کو ملزم نامزد کیا گیا ہے ۔منی لانڈرنگ کیلئے استعمال ہونے والا اے ون انٹرنیشنل اکاؤنٹ طارق سلطان نامی شخص کے نام پر کھولا گیا، اکاؤنٹ کھولنے کے لئے طارق سلطان کے جعلی دستخط کئے اور دھوکہ دہی سے ان کے شناختی کارڈ کی کاپی استعمال کی گئی۔ سمٹ بنک کی سابق آپریشن مینجر کرن امان نے طارق سلطان کے دستخط اصل ہونے کی تصدیق کی جس کے بعد اکاؤنٹ کھولا گیا۔ طارق سلطان نے اپنے نام پر کھولے گئے اکاؤنٹ سے انکار کیا،اس کے دستخط کی تصدیق کے لیے نیب تفتیشی ٹیم نے ماہر ہینڈ رائٹنگ کی خدمات حاصل کیں جس نے دستخط جعلی ہونے کی تصدیق کردی،عدالت میں ریفرنس دائر ہونے کے بعد کرن امان وعدہ معاف گواہ بن گئیں اوراعتراف کیا کہ اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کے لیے استعمال ہونے والا اے ون انٹرنیشنل اکاؤنٹ آصف زرداری کے قریبی ساتھی حسین لوائی کے کہنے پر کھولا گیا تھا۔ کرن امان کی ساتھی بنک آفیسر نورین سلطان ، یو اے ای کے ناصر لوتھا اور اومنی گروپ کے حسین فیصل جاموٹ کیس میں وعدہ معاف گواہ بن چکے ہیں جبکہ احتساب عدالت نے 24 جولائی کو ایک ملزم کی پلی بار گین رپورٹ طلب کرتے ہوئے سابق صدر پر فرد جرم عائد کرنے کی تاریخ مقرر کررکھی ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

izmir escort
php shell
sakarya escort adapazarı escort beylikdüzü escort esenyurt escort istanbul escort beylikdüzü escort istanbul escort avcılar escort beylikdüzü escort şişli escort
istanbul escort bayan bilgileri istanbul escort ilanlari istanbul escort profilleri hakkinda istanbul escort sitesi istanbul escort numaralari istanbul escort fotograflari istanbul escort bayanlarin iletisim numaralari istanbul escort aramalari yapilan site istanbul escort istanbul escort
ısparta escort bayan profilleri bilecik escort ilanları edirne escort kadınlarının profilleri bolu escort numaraları kırşehir escort fotoğrafları burdur escort bayanların telefon numaraları ayvalık escort bayan ilanları amasya escort profilleri adapazarı escort bayan numaraları çorlu escort sitesi hakkında rize escort zonguldak escort ilanları trabzon escort bayan ilanları ve profilleri edirne escort