بےبس اللہ‎ کے بہت قریب ہوتا

ایک غریب کسان حضرت معین الدین چشتی اجمیریؒ کے پاس آیا اور کہا حاکم نے میری زمین کی ساری پیداوار روک لی ہے اور کہتا ہے جب تک شاہی فرمان نہیں لاﺅ گے ایک دانہ بھی نہیں ملے گا‘ میری زندگی کا ذریعہ یہی پیداوار ہے‘میرے بچے بھوکے مر جائیں گے‘آپؒ نے فرمایا اگر ساری زندگی کےلئے فرمان مل جائے تو کسان نے کہا پھر تو کیا ہی کہنے‘ آپؒ اس کے ساتھ فوراً دہلی روانہ ہو گئے‘

بادشاہ کو پتہ چلا تو فوجوں سمیت استقبال کو نکلا‘ جب کام کا پتہ چلا تو کہا‘حضرت آپؒ صرف حکم بھیج دیتے‘ خود زحمت کرنے کی کیا ضرورت تھی‘ آپؒ نے فرمایا‘ جب یہ کسان میرے پاس آیا تو اپنی بے بسی کے سبب اللہ کے اتنا قریب تھا کہ اس کی مدد کرنا‘ اس کے کام میں شریک ہونا ‘اللہ کی عین بندگی تھی‘ اس لئے اللہ کی بندگی اور رضا حاصل کرنے کےلئے میں خود آیا ہوں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.


asp shell
bahelievler escort antalya escort ili escort esenyurt escort beylikdz escort avclar escort