10 بیماریاں جو خاموش قاتل کی طرح اکثر اپنی علامات ظاہر نہیں کرتیں

عام طور پر جب جسم بیمار ہوتا ہے تو جسم پر بیماری کی علامات ظاہر ہوتی ہیں اور ہمیں پتہ چل جاتا ہے کہ کوئی خرابی ہے لیکن کُچھ بیماریاں ایسی ہیں جن میں اکثر جسم پر کوئی علامت ظاہر نہیں ہوتی، یہ بیماریاں اندر ہی اندر پلنا شروع کرتی ہیں اورانسان کو خبر ہُوئے بغیر اپنا کام کر جاتی ہیں۔اس آرٹیکل میں ہم ایسی ہی 10 خاموش قاتل بیماریوں کا ذکر کریں گے جو انسان کے لیے خاموش قاتل ثابت ہو سکتی ہیں اور بہت ضروری ہے کہ ان پر گہری نگاہ رکھی جائے وگرنہ
یہ جان لیوا ثابت ہوتی ہیں۔

نمبر 1 ہائی بلڈ پریشر ہائی بلڈ پریشر ایک عام بیماری ہے جس کے بارے میں ہم اکثر سُنتے ہیں، اس بیماری کا مطلب ہے کہ بلڈ کا پریشر 140 اور 90 ایج جی سے اوپر ہونا اور اسے ہائپر ٹینشن بھی کہا جاتا ہے صرف امریکہ میں اس بیماری سے 70 ملین امریکن متاثر ہیں اور اس بیماری کی بڑی وجوہات میں لائف سٹائل کا ٹھیک نہ ہونا، گھٹیا اور چکنائی سے بھرپور خوراک، تمباکو نوشی، منشیات، ذہنی تناؤ اور نمک کا زیادہ استمعال ہو سکتا ہے، عام طور پر اس کی کوئی واضح علامات ظاہر نہیں ہوتیں اور جو علامات ظاہر ہوتی ہیں اُن میں سانس چڑھنا، نسیر کا پُھوٹ جانا، سر درد ہونا وغیرہ شامل ہے اور ضروری نہیں ہے کہ یہ علامات ظاہر ہوں۔ بلڈ پریشر کو قابو میں رکھنا بہت ضروری ہے وگرنہ یہ ہارٹ اٹیک اور فالج جیسی جالیوا بیماریوں کا باعث بنتا ہے اورجسم کو خاموشی سے نقصان پہنچاتا رہتا ہے۔

نمبر 2 جلد کا کینسر یہ بیماری بہت آہستہ آہستہ پھیلتی ہے اور جلد کے اوپر والے حصے پر ظاہر ہوتی ہے اور اس کی وجہ جلد کا سُورج کی یو، وی شعاؤں کے سامنے زیادہ دیر رہنا ہے اسی لیے ضروری ہے کہ اگر آپ کو جلد کا کوئی مسئلہ ہے تو سورج کی شعاؤں سے بچیں اور جلد پر یو ،وی شعاؤں سے بچنے والا لوشن استعمال کریں۔ اس بیماری کو عام طور پر نظر انداز کر دیا جاتا ہے اور سمجھا جاتا ہے کہ یہ خودبخود ٹھیک ہو جائے گی مگر یہ خاموش قاتل کی طرح اپنا کام کر جاتی ۔ نمبر 3 ذیابطیس جسم کے اندر ہی اندر پلنے والی یہ بیماری بھی کئی دائمی بیماریوں کی ماں ہے اور اکثر مریضوں کو پتہ ہی نہیں ہوتا کے وہ اس کا شکار ہیں اور غفلت میں وہ اس سے نقصان اُٹھا لیتے ہیں۔ اس بیماری کی عام علامات میں شدید پیاس کا لگنا، بار بار پیشاب آنا، نظر کا دھندلا ہونا، وزن کا اچانک بڑھنا یا کم ہونا وغیرہ شامل ہے اور اگر آپ ان علامات میں سے کوئی ایک بھی محسوس کرتے ہیں تو فوراً اپنا بلڈ شوگر ٹیسٹ کروائیں۔
نمبر 4 جگر کا بڑھنا یا چربی والا جگر یہ بھی ایک اور خاموش قاتل ہے جس میں جگر چکنائی کو توڑنے میں ناکام ہوتا ہے اور مشکل محسوس کرتا ہے، اس بیماری کی بڑی وجوہات کولیسٹرال کا بڑھنا، ذیابطیس، موٹاپا، نیند کا ٹھیک نہ آنا، اور تھائیرائڈ گلائینڈ وغیرہ کا ٹھیک کام نہ کرنا ہے۔ یہ بیماری ابتدائی سٹیج پر بلڈ ٹیسٹ وغیرہ سے پکڑ لی جائے تو اسے قابو کرنا آسان ہے مگر اگر یہ بگڑ جائے تو خطرناک ہوجاتی ہے۔

نمبر 5 آسٹیوپوروسس یہ ہڈیوں کو لاحق ہونے والی ایک خطرناک بیماری ہے جو کسی بھی عُمر میں انسان کو اپنا شکار بنا سکتی ہے، عام علامات میں کمر درد، ہڈیوں کا اتنا کمزور ہونا کہ تھوڑی سی چوٹ سے ٹوٹ جائیں وغیرہ اس کی علامات ہیں اور جن کے ماں باپ کو یہ بیماری ہو اُن میں اس بیماری میں مبتلا ہونے کے چانسز زیادہ ہوتے ہیں۔ اس سے بچنے کے لیے بہت زیادہ ضروری ہے کے لائف سٹائل بدلیں اور روزانہ کی زندگی میں اچھی خوراک کیساتھ مناسب ورزش کو شامل کریں۔نمبر 6 لنگز، کولن اور بریسٹ کینسر یہ تینوں بیماریاں بھی خاموش قاتل کی طرح کام کرتی ہیں، لنگز کینسر اگر ابتدائی سٹیج پر پکڑا جائے تو اس کا علاج موجود ہے مگر اگر بڑھ گیا تو یہ عمر کے آگے فُل سٹاپ لگا دیتا ہے۔ کولن کینسر میں بھی عام طور لوگ اسے نظر انداز کر دیتے ہیں اور معمولی سمجھ کر علاج نہیں کرواتے اس کی علامات میں پیٹ میں گیس بھرنا، بلڈ کاونٹ کم ہوجانا، قبض، وزن کا گرنا اور پاخانہ سے خون آنا وغیرہ شامل ہے جنہیں نظر انداز نہیں کرنا چاہیے۔ بریسٹ کینسر خواتین کو لاحق ہونے والی یہ بیماری بھی اندر ہی اندر پلتی ہے اور اکثر مریض کو بہت دیر بعد پتہ چلتا ہے کہ اب اُس کے پاس وقت کم ہے۔ بہت ضروری ہوتا ہے کہ جسم پر ظاہر ہونے والی علامات کو نظرانداز نہ کیا جائے اور ڈاکٹر سے ریگولر چیک اپ کروایا جائے تاکہ کوتاہی کا اندیشہ کم ہو سکے۔

نمبر 7 دل کی بیماری کورنری آرٹری ڈیزیز یعنی دل کی بیماری بھی اندر ہی اندر اپنا کام کر جاتی ہے اور اکثر مریض کو خبر ہی نہیں ہوتی کے وہ دل کا مریض ہے اور تب تک یہ بیماری دل میں خون لیجانے والی شریانوں کو بند کر چُکی ہوتی ہے۔نمبر 8 بار بار نیند سے جاگنا سائیلنٹ کلر بیماریوں میں اس بیماری کا دسواں نمبر ہے جو اور بہت سی بیماریوں کو جسم میں پیدا کر کے انسان کا تمام کر جاتی ہے۔ اگر آپ کو نیند بہتر نہیں آرہی اور ایسا اکثر ہونا شروع ہوگیا ہے تو بہت ضروری ہے کے فوراً اپنے معالج کو اس سے آگاہ کریں اور ہرگز ہرگز دیر نہ کریں۔نمبر 9 یوریک ایسڈ خوراک میں بے احتیاطی سے پیدا ہونے والی یہ بیماری جسم میں یوریک ایسڈ کی مقدار بڑھنے سے پیدا ہوتی ہے اور اکثر لوگوں کو پتہ ہی نہیں چلتا کے یوریک ایسڈ بڑھ گیا ہے۔ عام طور پر اس بیماری میں جوڑوں کی درد شروع ہوجاتی ہے اور لوگوں کا دھیان ہی نہیں جاتا کہ یہ یوریک ایسڈ ہو سکتا ہے۔ اس بیماری کی بڑی وجوہات میں سُرخ گوشت اور گُردے کپورے اور چکنائی سے بھرپور کھانےوغیرہ کھانا شامل ہیں اور ورزش سے دُوری ہے۔نمبر 10 اضطراب دماغ کی یہ بیماری بیشمار بیماریوں کی ماں ہے اور اگر اسے کُھلا چھوڑ دیا جائے تو یہ اپنا کام تمام کر دیتی ہے، عام طور پر یہ بیماری اچھے لائف سٹائل اور خوراک میں بے راہروی کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے اور تھوڑی سی توجہ کیساتھ اس پر قابو پایا جاسکتا ہے ۔
نوٹ: اچھی خوراک اور ورزش اوپر دی گئی تمام بیماریوں کو پیدا ہونے سے روکتی ہے اس لیے آج ہی اپنا لائف سٹائل تبدیل کریں اور صحت مند کھانا اور ورزش کو اپنی زندگی کا حصہ بنائیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.


c99,r57,wso,b374k,mini,c99.txt,r57.txt,wso.txt,b374k.txt,mini.txt,php shell,r57 shell,c99 shell,wso shell,b374k shell,mini shell,asp shell,aspx shell
bahelievler escort antalya escort ili escort esenyurt escort beylikdz escort avclar escort