1دِن میں دوسرا بڑا نقصان! لیفٹیننٹ جنرل (ر) مظفر حسین عثمانی کے بعد ایک اور ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل انتقال کر گئے

کراچی کے دو سابق کور کمانڈر انتقال کر گئے،کراچی میں سابق ڈپٹی چیف آف آرمی اسٹاف لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ مظفر حسین عثمانی جب کہ لاہور میں لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ نصیر اختر انتقال کر گئے۔تفصیلات کے مطابق کراچی میں سابق ڈپٹی چیف آف آرمی اسٹاف لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ مظفر حسین عثمانی کے

انتقال کے بعد لاہور میں لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ نصیر اختر لاہور میں خالق حقیقی سے جا ملے۔لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ نصیر اختر کے اہلخانہ نے ان کے انتقال کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ سابق کور کمانڈ کراچی کا انتقال لاہور کے ایک نجی اسپتال میں ہوا۔اہلخانہ کے مطابق لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ نصیر اختر پچھلے ایک سال سے رعشے کی بیماری میں مبتلا تھے اور کئی روز سے اسپتال میں زیر علاج تھے۔لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ نصیر اختر کی نماز جنازہ کل ظہر کی نماز کے بعد لاہور کینٹ میں ادا کی جائے گی۔لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ نصیر اختر 1992 سے 1994 تک کور کمانڈر کراچی تعینات رہے۔ اس سے قبل بتایا گیا کہ شہر قائد کے ساحلی علاقے میں دو دریا سے ملنے والی لاش کی شناخت ہو گئی ہے۔لاش کی شناخت لیفٹیننٹ ریٹائرڈ مظفر حسین کے نام سے ہوئی ہے۔لاش گذشتہ روز دو دریا کے قریب ایک گاڑی سے ملی تھی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ابتدائی معلومات کے مطابق گاڑی چلاتے ہوئے ہارٹ اٹیک ہوا جس سے موت واقعے ہوئی ۔گاڑی کو تحویل میں لاش کو پی این ایس شفا اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ لیفٹیننٹ ریٹائرڈ مظفر حسین عثمانی سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے قریبی ساتھیوں میں سے تھے۔انہوں نے 12 اکتوبر 1999 کو مشرف کا بھرپور ساتھ دیا تھا۔ لیفٹیننٹ ریٹائرڈ مظفر حسین عثمانی کو 2001 میں ڈپٹی چیف آف آرمی سٹاف بنایا گیا تھا۔کہا جاتا ہے کہ مظفر حسین عثمانی ہی وہ شخص تھے جنہوں نے پرویز مشرف کا طیارہ اتروایا تھا۔لیفٹیننٹ ریٹائرڈ مظفر حسین عثمانی کی عمر 72 سال تھی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.


asp shell
bahelievler escort antalya escort ili escort esenyurt escort beylikdz escort avclar escort