سردیوں کی سوغات ! گرما گرم مونگ پھلی ہمارے 11جسمانی مسائل جن کا علاج صرف مونگ پھلی کھانے میں | لیکن کیسے؟

سردیوں میں سورج غروب ہوتے ہی فضاء میں ٹن ٹن کی مخصوص آواز گنگناتی ہے اور اس کے ساتھ ہی مٹی میں بھونی جانے والی مونگ پھلی کی مہک ہمیں اپنی جانب کھینچنے لگتی ہے ۔ سچ ہے کہ سردی کے موسم میں گرما گرم مونگ پھلی کھانے کا اپناہی مزہ ہے ۔ اسے دیکھ کر کھائے بنا رہا نہیں جاتا اور کیوں نہ کھائیں یہ صحت کے لئے انتہائی مفید بھی تو ہے ۔

مونگ پھلی کو غریبوں کا بادام کہا جاتا ہے ۔ اپنے گوناگوں فوائد کی وجہ سے اسے مکمل خوراک قرار دیا جاتا ہے ۔ اس میں 28%لحمیات پائے جاتے ہیں جب کہ اس میں فیٹ تھایا مائن ، نیاسن ، فولاد ، وٹامن ای ، ڈی ، کے اور بی 6،فولیٹ ، کیلشیم ، جست اورمفید غیر تکسیدی اجزاء پائے جاتے ہیں جو درج ذیل ہیں ۔ ۱۔ مونگ پھلی میں پائے جانے والے غیر تکسیدی اجزء غذائیت کے اعتبار سے سیب ، چقندر اور گاجر سے زیادہ طاقتور ہوتے ہیں ۔ ۲۔ غیر تکسیدی اجزاء جلد کی خشکی دورکرتے ہیں ۔ ۳۔ ہونٹوں کو گلابی کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں ۔
۴۔ اس کا وٹامن ڈی ہڈیاں اور دانت مضبوط بنا کر انہیں بیماریوں سے دور رکھتا ہے ۔ ۵۔ مونگ پھلی میں موجود وٹامن سی سرطان کے خلاف لڑنے کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے ۔ ۶۔ قدرتی فولاد خون کے نئے خلیات بنانے میں اہم کردار ادا کرتاہے۔ ۷۔ 100گرام کچی مونگ پھلی میں ایک کلو دودھ کے برابر لحمیات ہوتے ہیں ۔ ۸۔ اس میں حیاتین کی مقدار گوشت کے مقابلے میں 1.3گنا زیادہ ہوتی ہے ۔ ۹۔ معدے اور پھیپھڑوں کو طاقت دیتی ہے ۔ ۱۰۔ ذیابیطس کے مریضوں کے لئے مونگ پھلی کا استعمال نہایت مفید ہے ۔ ۱۱۔مونگ پھلی کا استعمال انسولین استعمال کرنے والے افراد کے خون میں انسولین کی سطح برقرار رکھنے میں اہم کردار اداکرتاہے۔ سائنسدانوں کا مشورہ ہے کہ مونگ پھلی کے شوقین اگر اسے کچی ، بھنی ہوئی یا تلی ہوئی شکل میں کھانے کے بجائے اُبال کر کھائیں تو اس سے جسم کو ایسے مفید صحت کیمیائی مادے 4گنا مقدار تک حاصل ہوں گے ، جوبیمار سے مدافعت میں مدددیتے ہیں ۔

تاہم مونگ پھلی کو بہت زیادہ پکانے یا گرمیں پہنچانے سے اس کے مفید صحت کیمیائی مادے ضائع ہوجاتے ہیں ۔ کیا مونگ پھلی آپ کو موٹا کرتی ہے؟ سردیوں کے موسم میں میوا کھانے کے شوقین افراد سب سے زیادہ شاید مونگ پھلی کھانا پسند کرتے ہیں، ٹھنڈی راتوں میں مونگ پھلی کھانے کا مزا بھی کچھ اور ہی ہے۔ شاید ہی کوئی ایسا ہوگا جسے مونگ پھلی کھانا پسند نہ ہو، لیکن کیا مونگ پھلی ہمارا وزن بڑھاتی ہے؟ ویسے تو مونگ پھلی کھانے کے بہت سے فوائد ہوتے ہیں، لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ اس میوے کو اگر صحیح تعداد میں نہ کھایا جائے تو اس سے وزن میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ جی ہاں، اگر کسی کو بہت زیادہ مونگ پھلی کھانے کی عادت ہو تو اس کا وزن بڑھ بھی سکتا ہے۔ اگر آپ روزانہ اپنا وزن کم کرنے کے لیے جم میں ورزش کررہے ہیں تو بہتر ہے کہ مونگ پھلی کو اپنی خوراک نہ بنائیں۔ روزانہ مونگ پھلی کھانے سے آپ کے وزن میں اضافہ ہوسکتا ہے، کیوں کہ ان میں کیلوریز میں مقدار بہت زیادہ ہوتی ہے۔
نمکین مونگ پھلی وزن میں اور تیزی سے اضافہ کرتی ہے، کیوں کہ اس میں سوڈیم کی مقدار بھی زیادہ ہوتی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

boztepe escort
trabzon escort
göynücek escort
burdur escort
hendek escort
keşan escort
amasya escort
zonguldak escort
çorlu escort
escort ısparta