پاکستانیوں پر نئی مصیبت ٹوٹ پڑی۔۔کراچی میں کورونا کے بعد ایک اور نیا وائرس سامنے آ گیا

پاکستانیوں پر نئی مصیبت ٹوٹ پڑی۔۔کراچی میں کورونا کے بعد ایک اور نیا وائرس سامنے آ گیا
کورونا سے چان چھوٹی نہیں کہ ایک اور وائرس نے سر اُٹھا لیا، شہرِ قائد میں ایل اور وائرس کی تشخیص ہو گئی۔تفصیلات کے مطابق کراچی میں ایک اور وائرس کا مرض سامنے آیا ہے، جس کے باعث شہریوں میں تشویش کی لہر ڈور گئی ہے، جناح اسپتال کی سربراہ اور ایگزیکٹیو آفیسر ڈاکٹر سیمی جمالی نے تصدیق کرتے ہوئے کہا

کہ جناح اسپتال میں کانگو وائرس سے متاثرہ مریض کو داخل کیا گیا ہے۔سیمی جمالی کے مطابق سال دوہزار اکیس میں کانگو کا یہ پہلا کیس ہے، مریض کو آئسولیشن وارڈ میں شفٹ کر دیا گیا ہے، متاثرہ شخص بلاول چورنگی کا رہائشی ہے جبکہ پیشے کے اعتبار سے چرواہا ہے۔ کانگو وائرس کیا ہے؟ کانگو وائرس مویشی کی کھال سے چپکی چیچڑوں میں پایا جاتا

ہے، چیچڑی کے کاٹنے سے وائرس انسان میں منتقل ہو جاتا ہے، قومی ادارۂ صحت کے مطابق نیرو نامی وائرس انسانی خون، تھوک اور فضلات میں پایا جاتا ہے جو انسانوں میں گانگو بخار پھیلاتا ہے۔ کانگو کی علامات کانگو وائرس سے متاثرہ شخص کو تیز بخار، کمر، پٹھوں، گردن میں درد، قے، متلی، گلے کی سوزش اور جسم پر سرخ دھبے پڑ جاتے ہیں۔ احتیاطی تدابیر جانوروں کے پاس جانے سے گریز کریں، مویشیوں کے پاس جانے کی ضرورت پیش آئے تو دستانوں کا استعمال ضرور کریں۔ یاد رہے کہ کانگو وائرس کے خاتمے کے لیے تا حال کوئی ویکسین ایجاد نہیں ہوئی ہے لہٰذا قبل از وقت احتیاط اور مرض ظاہر ہو جانے کی صورت میں فوری اور بر وقت علاج ضروری ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.