رات کو سوتے وقت یہ عمل کر یں ، صبح چہر ہ چاند کی طرح چمکے گا

میں صرف اتنا ہی کہوں گا کہ جو آنکھ اس وقت میری باتیں دیکھ رہی ہے اور جو کان میری آواز سن رہے ہیں۔ میری دعا ہے کہ آپ ہمیشہ خوش رہیں آباد رہیں۔ ہم ایک بہت ہی اہم موضوع پر بات کرنے والے ہیں کہ ہمارے اکثر و بیشتر خواتین و حضرات بھائی بہنیں صرف اس لیے پریشان ہیں کہ بعض افراد کے چہرے پر کیل مہاصے چھائیاں وغیرہ ہوتی ہیں اور بعض لوگ اپنے سانولے رنگ کی وجہ سے پریشان ہوتے ہیں۔ یہاں تک کہ یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ زیادہ تر لوگ سانولے رنگ کی وجہ سے رشتے تک ٹھکرا دیتے ہیں آج کا یہ نورانی عمل ان تمام حضرات کے لیے ہے جو اپنے چہرے کو خوبصورت و حسین بنا نا چاہتے ہیں۔

تمام رنگ اللہ کے ہی عطا کر دہ ہیں مگر کچھ لوگ اس کو عیب سمجھ لیتے ہیں تو آج ہم اسی پریشانی کا حل لے کر آپ کی خدمت میں حاضر ہوئے ہیں کہ اللہ کریم کا ایک اسمِ مبارک پڑھیں اور آپ کے چہرے پر ایسی رونق اور ایسی رونایت ہوگی کہ ہر کوئی آپ کا دیوانہ ہو جائے گا جو دیکھے گا وہ دیکھتا ہی رہ جائے گا ۔ سفید رنگ ہی مطلوب نہیں بلکہ نورانیت مطلوب ہے۔ ورنہ تو انگریزوں سے زیادہ کسی کا سفید رنگ نہیں ہوتا مگر ان کے چہرے پر نورانیت نہیں ہوتی نورانیت صرف اور صرف اللہ کریم کے ذکر میں ہے۔ حضرت ِ بلال حبشی ؓ رنگ کے اعتبار سے سانولے تھے مگر نورانیت اور نبیِ کریم ﷺ کی صحبت کا یہ اثر تھا کہ چلتے زمین پر تھے اور ان کے قدموں کی آواز جنت میں سنائی دیتی تھی۔

آج جو وظیفہ لے کر آپ حضرات کی خدمت میں ہم حاضر ہوئے ہیں یہ عمل کرنے سے آپ کے چہرے پر ایسی نورانیت ہو گی کہ جو دنیا کی کوئی کریم یا کوئی بھی بیوٹی پارلر نہیں دے سکتا۔ جو لوگ چہرے کی خوبصورتی چاہتے ہیں تو وہ یہ عمل کر یں اور اس کا رزلٹ خود اپنی آنکھوں سے دیکھیں جو لوگ اس بات سے پریشان ہیں وہ طرح طرح کی کر یمیں استعمال کر تے ہیں اور ٹوٹکے استعمال کر تے ہیں جو کہ وقتی طور پر شاید سفید رنگ دے دیتے ہوں گے مگر بعد میں جلد کے کینسر جیسی بیماریوں کا شکار ہو جاتے ہیں اور چہرے کی حالت اس قدر خراب ہو جاتی ہے۔

کہ دیکھنا تک مشکل ہو جاتا ہے اس کی وجہ یہی ہے کہ ہم اپنے دین و سنت کی باتوں کو چھوڑ کر کریموں کے پیچھے لگ گئے ہیں تو اپنےآ ج کے وظیفہ کی جانب چلتے ہیں اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ کا چہرہ حسین اور دل کش اور خوبصورت ہو تو آپ اس عمل کو کر یں نماز والا درود یا کوئی بھی درودِ پاک جو آپ کو یاد ہو وہ تین مرتبہ پڑھنا ہے اور اس کے بعد اللہ کریم کا یہ اسمِ مبارک “یا کریم” ایک سو مرتبہ پڑھنا ہے اور پھر سے وہی تین مرتبہ درودِ پاک پڑھنا ہے جو آپ نے شروع میں پڑھا ہو اور اس کے بعد دونوں ہاتھوں پر پھو نک مار کر پورے چہرے پر اچھی طرح پھیر لیں

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.