وہ لڑکی اپنی سہیلی کے ساتھ ہوٹل میں کھانا کھا رہی تھی

وہ اپنے شوہر کو پیار سے دیکھ رہی تھی ۔وہ اس کو افسانوی کردار لگتا تھا۔ جس کا دل بڑا تھا۔ جو محبت میں لاثانی تھا۔آج وہ ماضی کی سوچوں میں محو تھی۔اسے پانچ سال پہلے کے واقعات یاد آئے تو اس کی آنکھیں نم ہو گئیں۔ وہ کتنی نادان تھی۔ اگر اسے وہ شخص مل جائے تو اسے ق تل کردے۔ اسکی ملاقات اس لڑکے سے پہلی بار ایک کیفے میں ہوئی۔جب وہ اپنی سہیلیوں کے ساتھ کھانا کھا رہی تھی۔ ان کی نظریں آپس میں ملیں اس کی شخصیت میں سحر تھا۔ اس لڑکے نے ایک پرچی پر اپنا فون نمبر لکھ کر اپنی میز پر رکھا دیا۔اس کی قسمت خراب تھی کہ اس نے اس پرچی کو بعد میں اپنے پرس میں رکھ لیا۔ کئی دن بعد اس نے ہمت کی

اور اسے فون ملایا۔اس کی باتوں میں عجیب مٹھاس تھی، جس کی وجہ سے وہ اس کے قریب آگئ ، لڑکے نے ملاقات کے لیے اصرار شروع کردیا، پہلے تو اسے منع کرتی رہی لیکن ایک دن اس نے ملنے کی حامی بھر لی۔ جب دونوں نے بیٹھ کر پہلی دفعہ بات کی، تو اسے بہت اچھا لگا،پھر یہ سلسلہ چلنا شروع ہوگیا کہ ہفتے میں ایک دن ملاقات ضرور ہوتی تھی۔ وہ ایک دم خیالات کی دنیا سے واپس آگئ۔اس نے اپنے شوہر کو ایک بار پھر پیار کی نظر سے دیکھا، اسے اگر اس بات کی پرواہ نہ ہوتی کہ اسکی نیند خراب ہوجائے گی تو ضرور اس کے ہاتھ کو چ۔وم لیتی، جس نے اسکا بہت مشکل وقت ہاتھ تھاما تھا۔آج نیند اس سے کوسوں دور تھی۔ وہ پھر ماضی کی دنیا میں واپس چلی گئ۔اسں لڑکےنے اسے پہلی بار اپنے گھر آنے کی دعوت دی، اس نے بتایا تھا کہ وہ یتیم ہے۔ اس کا دنیا میں کوئ نہیں ہے۔ اس وجہ سے اسے اس کی ذات سے محبت کے ساتھ ہمدردی بھی تھی۔ گھر میں ملاقاتیں ہونی شروع ہوگئیں۔پھر ایک دن وہ کام ہو گیا، جس کا کوئ عزت دار بندہ تصور بھی نہیں کرسکتا۔وہ اس دن بہت غمگین تھی کہ اس سے یہ غلطی کیوں ہوگئ، مگر اسے اس لڑکے کی محبت پر بھروسہ تھا کہ وہ اسکی غلطی کو جلد ہی شادی کے ذریعے ٹھیک کردے گا، وہ شادی کا اصرار کرتی تو وہ ہنس کر ٹال دیتا کہ اتنی بھی کیا جلدی ہے۔ ی۔پھر اچانک وہ غائب ہوگیا، اس کے بعد کبھی اس سے ملاقات نہیں ہوئ۔

اس کا گھر بھی خالی تھا، جو کرائے کا تھا، اس کے موبائل نمبرز بھی بند تھے۔ چند ماہ ہی ہوئے تھے کہ ایک دن اس کا بھائی باہر سے آیا اور اسے م۔ارنا شروع کردیا۔ اسے سمجھ نہیں آرہی تھی کہ اسکا قص۔ور کیا ہے، اس نے پوچھا، مگر وہ کچھ نہیں سن رہا تھا۔ گھر والوں کے پوچھنے پر اسکے بھائی نے بتایا کہ میں نے اس کی ایک لڑکے کے ساتھ نا زیب۔ا ویڈیو دیکھی ہے۔پھر اسں نے بتایا کہ وہ لڑکا جس سے یہ پیار کرتی تھی ۔اسکا یہ کاروبار تھا وہ ویڈیوز بنا کر مارکیٹ میں ف۔روخت کرتا تھا۔

کل لڑکے والے دیکھنے آئیں گے۔لڑکے والے آئے اور اسے پسند کرگئے، مگر وہ خود دل سے مطمئن نہیں تھی، اسے سچ بتانا تھا، اس نے کسی طرح لڑکے کا نمبر لیا اور اس سے بات کی، اس نے سب کچھ سچ سچ بتا دیا۔اس نے ساری باتیں سننے کے بعد کھلے دل سے اس کو قبول کیا۔ اس نے اس کی سوچ سے زیادہ اسکا احترام کیا اور پیار دیا۔تم ابھی تک سوئی نہیں ہو، آرام کرو۔اس کے شوہر کی آنکھ کھل گئ جی میں بس سونے لگی ہوں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *