صورتحال قابو سے باہر! ٹرانسپورٹ بند کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا

صورتحال قابو سے باہر! ٹرانسپورٹ بند کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت نے کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر صوبے میں پبلک ٹرانسپورٹ ہفتہ اور اتوار بند رکھنے کا فیصلہ کرلیا۔ تفصیلات کے مطابق اس ضمن مین صوبائی حکومت کی طرف سے جاری کیے گئے ایک اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ صوبے میں ہفتہ اور اتوار

کے روز بین الاضلاعی پبلک ٹرانسپورٹ نہیں چلے گی جب کہ اس پابندی کا اطلاق پرائیویٹ اور مال بردار گاڑیوں پر نہیں ہوگا۔مشیراطلاعات خیبرپختونخوا کامران بنگش نے کہا ہے کہ کورونا کی تیسری لہر پر قابو پانے کےلیے عوامی تعاون درکار ہے ، کیوں کہ خیبرپختونخوا کے مختلف اضلاع میں کورونا کیسز میں اضافہ ہورہاہے ، کورونا کےباعث اسپتالوں پربوجھ بڑھ گیا ہے۔صوبائی وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا کا کہنا ہے کہ سوات کے اسپتالوں

میں کورونامریض داخل ہیں ، خیبرپختونخوا میں اسپتالوں کی استعداد بڑھانے کےلیے اقدامات ہورہے ہیں ، اسپتالوں کی استعدادکارمیں اضافہ کیاجارہاہے ، صوابی ،چارسدہ اور مردان میں کورونامتاثرین کے لیے سہولیات دی جارہی ہیں ، عوام کوسہولتوں کی فراہمی کیلئےہرممکن کوشش کررہےہیں ، ایل آر ایچ کی نئی عمارت کورونا مریضوں کے لیے مختص کردیا گیا۔خیال رہے کہ پاکستان میں کورونا کی تیسری لہر بے قابو ہوتی دکھائی دے رہی ہے ، جہاں پہلی بار 5 ہزار 234 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جب کہ ایک دن میں مزید 83 اموات ہوگئیں

، اموات کی مجموعی تعداد 14 ہزار613 تک پہنچ گئی ، ملک بھرمیں فعال کیسز کی تعداد 56 ہزار347 ہوگئی ، نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر این سی او سی کی طرف سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے لحاظ سے پاکستان کے 26 اضلاع کو ہائی رسک قرار دیا گیا ہے ، جن میں صوبہ پنجاب سے لاہور، فیصل آباد، گوجرانوالہ، بہاولپور، منڈی بہاؤالدین، ملتان، اوکاڑہ، رحیم یار خان، راولپنڈی، گجرات، شیخوپورہ، سرگودھا، سیالکوٹ، ٹوبہ ٹیک سنگھ شامل ہیں جب کہ آزاد کشمیر کے اضلاع مظفر آباد، میر پور، کوٹلی، صوبہ خیبر پختونخواۃ سے پشاور، سوات، نوشہرہ ، دیر لوئر، مالاکنڈ، صوابی، چارسدہ اور ہری پور شامل ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *