ادویات کیسے خریدیں انسانی زندگی بچانے والی ادویات کتنی مہنگی

ادویات کیسے خریدیں انسانی زندگی بچانے والی ادویات کتنی مہنگی

کراچی (مانٹرنگ ڈیسک ) ادویات مہنگی ہونے کے باعث مریضوں کی پہنچ سے دور، ذیابیطس، عارضہ قلب،فشارخون سمیت دیگر امراض کے مریض ایکوقت کی روٹی کوترس رہے ہیں ادویات کیسے

خریدیں،مریضوں کا موقف،شگر،بلڈ پریشر،عارضہ قلب سمیت و بیماریوں میں مبتلااطہرصدیقی،نثارعزیز سومرو،حاجی شجاعت احمدمریضوں کاکہناتھاکہ وفاقی حکومت عوام کو رلیف دینے کے بجائے ان کے

منہ سے روٹی کا لقمہ چھینے کے بعد اب غریب نادار بے پہنچ مریضوں کو اپنی زندگی بچانے کی ادویات کی خریداری کے لئے بھیک مانگنے پر مجبورکردیا ہےکراچی (مانٹرنگ ڈیسک ) ،وفاقی

بجٹ پیش ہونے کے بعد سے تاحال شگر،عارضہ قلب،بلڈپریشر سمیت دیگر امراض سے نجات دلانے والی ادویات کی قیمتیں آسمان پر پہنچ گئی ہے جو غریب مریضوںکی قوت خرید سے باہر ہوگئی ہے،

وزیر اعظم عمران خان نے بلند دعوے کرتے ہوئے کہاتھاکہ ادویات کی قیمتوں میں نمایاں کمی کی جائے گی ان کے دعوے دعوے ہی رہ گئے ہیں،،کراچی (مانٹرنگ ڈیسک ) مریضوں کاکہناتھاکہ سرکاری ہسپتالوں میں جو ادویاتمریضوں کو ادویات فراہم کی جارہی ہیں کی کوالٹی کے متعلق ڈاکٹر بھی غیر مطمئن ہونے کی وجہ سے وہ اپنے نسخے کی ادویات نجی میڈیکل اسٹوروں سے خرید کر صحت پانے کا مشورہ دیتے ہیں،مریضوں نے چیفجسٹس پاکستان،وزیر اعظم، وفاقی و صوبائی وزیر صحت سمیت دیگر ارباب اختیار سے ادویات کی قیمتوں میں توازن اور سستی کرکے انسانی زندگیوں کو بچایاجائے کا مطالبہ کیا

ہے۔کراچی (مانٹرنگ ڈیسک ) دوسری جانب ضلع ٹنڈوالہیار میں غیر قانونی میڈ یکل اسٹور ز کی بھر مار مذکررہ میڈیکل اسٹوز پر جعلی ادویات بھی فر وخت ہو نے کاانکشاف ہو ا ہے جبکہ بعض میڈ یکل اسٹوز پر نشہ آوار ادویات بھی فر وخت ہونے کی اطلاعات موصول ہو ئی ہیں، ملک بھر جیسے نئی نئی بیماریاں جنم لے رہی ہیں تو وہاں ہی جعلی ادویات بھی بنائی جارہی ہیں جبکہ دیہی علاقوں بغیر لائنس یا فتہ میڈ یکلاسٹوز کی بھی بھر مار ہے حکومت کو چائے کہ ایسے غیر قانونی میڈ یکل اسٹوز کے خلاف قانونی کاروائی کی جا ئےکراچی (مانٹرنگ ڈیسک ) جبکہ لائنس یافتہ میڈ یکل اسٹوز پر نشہ

آور ادویا ت کی فراہمی کی روک تھام کے لیے بھیاقدامات کیے جائیں ذرائع نے بتایا ہے کہ ادویات کو ایک درجہ حرات پر میڈیکل اسٹوز میں رکھنا ہو تا لیکن اس وقت سند ھ بھر کی ٹنڈوالہیار میں بھی شد ید گر می کے سبب درجہ حرات میں مسلسل اصافہہو رہا ہے جبکہ ہمارے میڈ یکل اسٹورز پر درجہ حرات کو ادویات کے حوالے سے رکھنے کے لیے کو ئی اقدامات نظر نہیں آتے شہر یوں نے ڈپٹی کمشنر ٹنڈوالہیار، ڈی ایچ او ٹنڈوالہیار اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کہ ہے ایسے میڈ یکل اسٹوز کو قانون کے ضبط میں لانے کے لیے اقدامات کیے جائیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.