accidental viagra porn viagra originale vendita viagra boys facebook 100 viagra levitra 10 mg prezzo in farmacia kamagra acquisto online kamagra prezzo online

دنیا کی پہلی خاتون جس نے ”آن لائن بے بی “ کو جنم دے دیا، ساری کہانی منظر عام پر

دنیا کی پہلی خاتون جس نے ”آن لائن بے بی “ کو جنم دے دیا، ساری کہانی منظر عام پر

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) برطانیہ میں ایک لڑکی شریک حیات کے بغیر ہی انٹر نیٹ کے ذریعے ایسے طریقے سے ایک بچی کی ماں بن گئی کہ سن کر آپ دنگ رہ جائیں گے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس 33سالہ لڑکی کا نام سٹیفنی ٹیلر ہے جو برطانوی قصبے نن تھروپ کی رہائشی ہے۔

سابق بوائے فرینڈ سے اس کا ایک بیٹا تھا اور اب وہ اکیلی رہ رہی تھی اور کسی مرد کے ساتھ نیا تعلق شروع نہیں کرنا چاہتی تھی مگر دوسری بار ماں بننے کی خواہش مند تھی۔

وہ کسی نطفہ عطیہ کرنے والے مرد کی مدد سے آئی وی ایف کلینک جا کر اپنی خواہش پوری کر سکتی تھی لیکن کلینک سے پروسیجر کرانا بہت مہنگا تھا۔ اس میں 1600پاﺅنڈ سے زائد رقم خرچ ہوتی

۔ اس پر سٹیفنی نے ایک اور طریقہ سوچا۔ اس نے ’جسٹ اے بے بی‘ نامی ایپلی کیشن کے ذریعے ایک سپرم ڈونر مرد سے رابطہ کیا جو اس کے گھر آ کر اسے نطفہ عطیہ کر گیا۔ اس نطفے کو اپنے جسم میں داخل کرنے اور حاملہ ہونے کے لیے سٹیفنی نے کسی ڈاکٹر کی مدد لینے کی بجائے ’ای بے‘ سے ایک انسیمینیشن کِٹ‘آرڈر کر دی۔

اب اگلا مرحلہ اس کٹ کے استعمال کا تھا۔ اس کے لیے اس نے یوٹیوب پر ویڈیوز دیکھیں اور ویڈیوز سے سیکھ کر اس کٹ کے ذریعے عطیہ میں حاصل ہونے والے سپرمز کو استعمال کرتے ہوئے تمام پروسیجر خود ہی کیا۔

خوش قسمتی سے پہلی ہی کوشش میں سٹیفنی حا ملہ ہو گئی اور اب اس کے ہاں ایک صحت مند بیٹی کی پیدا ہو چکی ہے جس کا نام اس نے ایڈن رکھا ہے۔ سٹیفنی کا کہنا ہے کہ ”آپ ایڈن کو ’آن لائن بے بی‘ کہہ سکتے ہیں۔ یہ ایک معجزے جیسا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *