سانپ کا گوشت اونٹ کی پسندیدہ غذا ہے اونٹ سانپ کھا کر پیاس لگنے کے باوجود فوراً پانی کیوں نہیں پیتا ؟

اونٹ سانپ کھا کر پیاس لگنے کے باوجود فوراً پانی کیوں نہیں پیتا ؟

بول اے-جے- کے ( ھیرت کدہ ) سانپ کا گوشت اونٹ کی پسندیدہ غذا ہے۔ اور اسے سانپ کا گوشت بے حد اشتیاق دیتا ہے. تو وہ اسے کھانا شروع کر دیتا ہے۔ عجیب بات یہ ہے کہ وہ

کھانے کی ابتداء اس کی دم سے کرتا ہےبول اے-جے- کے ( ھیرت کدہ ) ۔پھر آہستہ آہستہ اسے پورا کھا جاتا ہے ۔سانپ کا گوشت سخت گرم ہوتا ہے۔جب اونٹ اسے کھا لیتا ہے تو اسے

سخت پیاس محسوس ہوتی ہے۔اور وہ پیاس بھجانے کے لیے پانی کے کسی تالاب پر جاتا ہے۔اللہ نے تکوینی شکل میں اسے الھام کر رکھا ہے۔بول اے-جے- کے ( ھیرت کدہ ) اگر اس نے اس

وقت پانی پیا تو سانپ کا زہر اسکے پورے بدن میں پھیل جائے گا ۔ لہذا وہ شدید پیاسا ہونے کے باوجود تالاب پر پہنچ کر بھی کچھ دیر کے لیے پانی نہیں پیتا ۔ پھر وہ زور زور سے بلبلانے

لگ پڑتا ہے ۔بول اے-جے- کے ( ھیرت کدہ ) ایسے لگتا ہے جیسے وہ کسی سخت مشکل میں مبتلا ہےاور کسی کو اپنی مدد کے لیے پکار رہا ہے ۔ اس وقت اس کی آنکھوں سے آنسو بہنے لگ پڑتے ہیں ۔ اللہ نے اس کے پیوٹوں کے نیچے دو چھوٹے چھوٹے گڑھے بنائے ہوئے ہیں ۔ اس کے آنسو آنکھوں سے نکل کر ان گڑھوں میں جمع ہوتے ہیں اور یوں سانپ کا سارا زہر آنسو بن کر آنکھوں سے باہر آ جاتا ہے۔بول اے-جے- کے ( ھیرت کدہ ) عقل مند ساربان اس گڑھے میں جمع شدہ پانی کو کسی صاف شیشی میں بھر لیتے ہیں ۔ وہ زہریلا پانی سانپ اور بچھو کے کٹے کا تریاق دیتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *